Sushant suicide and the role of his girlfriend Riya Chakrawarty


Sushant suicide and the role of his girlfriend Riya Chakrawarty
Sushant Singh Rajput & Riya Chakrawarty


سشانت کی خودکشی اور اسکی گرل فرینڈ ریا چکرورتی کا کردار

وفا عباسی/ سنت کبیر نگر

معروف ترین بالی ووڈ اداکار سشانت سنگھ کی خودکشی کو میڈیا بالی ووڈ ہستیاں اور اس کے مداحوں کی جداگانہ آراء اور تمام طرح کی ہلچلوں سے میرے ذہن میں یہ بات پیدا ہورہی تھی اور اکثروبیشتر اپنے دوستوں سے یہ تذکرہ کرتے رہتا تھا کی اس کی موت میں کوئی ایسا راز چھپا ہے جس کا لوگ ادراک نہیں کر پارہے ہیں اور عوام نیپوٹزم اور بالی ووڈ کی ہستیوں پر سوال اٹھا رہے ہیں۔ لیکن ابھی جس طرح سشانت کے والد نے ایف آئی آر درج کرائی ہے اس سے تو پورا معاملہ اصل حقیقت کی طرف گامزن ہوتے ہوئے دکھائی دے رہا ہے۔سشانت کی موت میں ان کے والد اور دوستوں کی باتوں سے اصل کردار اسکی گرل فرینڈ ریا چکرورتی کا لگتا ہے جس نے سشانت کو خودکشی پر اکسایا۔

جب اداکار سشانت سنگھ اپنے کاروبار کے لئے دوسری جگہ کا رخ کرنے والا تھا تو اس کی گرل فرینڈ ریا نے اس کا لیپ ٹاپ اے ٹی ایم کارڈ اور اس کا پاسورڈ اور میڈیکل رپورٹ لے کر چلی گئی کیونکہ ریا چکرورتی کو لگتا تھا کی اب سشانت اس کے کسی کام کا نہیں اور ساتھ ہی میں سشانت کے والد کے حساب سے ریا نے اس کے بینک اکاونٹ سے پندرہ کروڑ  روپئے نکال لئے اور ریا ہمیشہ یہ دھمکی دیتی تھی کہ اگر وہ بزنس کے لئے فلم انڈسٹری کو خیرآباد کیا تو اس کی میڈیکل رپورٹ میڈیا میں دے دیگی اور کہہ دے گی کی سشانت دماغی طور پر فٹ نہیں ہے۔ایک الزام یہ بھی ہے کہ خودکشی سے پہلے ریا نے سشانت کے پورے اسٹاف کو بدل دیا تھا اور اپنے من مطابق تمام اسٹاف کو اپوائنٹ کیا تھااور سشانت کے سم کارڈ کو بھی بدل دیا تھا جس سے وہ اپنے گھروالوں اور دوست احباب سے بہت کم بات کرپاتا تھا۔

ان تمام  چیزوں کے علاوہ بہت سے ایسے سوالات ہیں جن کا رخ ریا کی طرف سیدھا جاتا ہے اور جس سے صاف ہوجاتا ہے کی ریا ہی اسکی خودکشی کی ذمہ دار ہے۔ اگر پوری باتوں کو نہایت ہی سنجیدگی سے دیکھا جائے تو اس میں دو باتیں نکل کر سامنے آرہی ہیں۔ پہلی بات سشانت کے والد اور اس کے دوستوں سے ملی جانکاری کے مطابق سوفیصد ریا ہی ذمہ دار ہے اور میڈیا کی رپورٹنگ سے یہ بات نکل کر سامنے آرہی ہے کی بیشتر لوگ ایسا ہی سوچ رہے ہیں۔دوسری بات سشانت کی گرل فرینڈ ریا کے کردار او راسکی کارکردگی اس چیز کی طرف اشارہ کرتے ہیں کی ریا نیپوٹزم کی مہرہ تھی اور اس کا ماسٹر مائنڈ بالی ووڈ کا اثرورسوخ دار طبقہ اور اس پر قبضہ جمانے والی ہستیوں کا ہے۔کیونکہ تمام حالات کو مدِنظر رکھتے ہوئے دیکھا جائے تو کسی نہ کسی موڑپر یہ بات سامنے آرہی ہے کی سشانت سے کوئی ٹھیک طرح سے بات نہیں کرتا تھا اور جس طرح کچھ اداکار اور فلم میکر اس کے ساتھ برتاو کرتے تھے  ان چیزوں سے صاف ہوجاتا ہے کی اس میں کہیں نہ کہیں نیپوٹزم بھی شامل ہے جس سے سشانت نے خودکشی کا قدم اٹھایا۔

ابھی ایک دو دنوں سے تازہ معاملہ پولس کے سپرد ہے اور اسمیں بہار پولس کی طرف سے ایک جانچ کا دستہ ممبئی کی جانب روانہ ہوا ہے جس کی جانچ کے بعد ہی حقیقت کا خلاصہ ممکن ہوسکے گا اور اس کے قصورواروں کو  سزا مل پائے گی۔ اور تیسری بات یہ کہ ابھی 29 جولائی 2020 کو ایک مراٹھی اداکار آشوتوش بھاکرے نے بھی خودکشی کرلی ہے جو فلمی دنیا کی ہستیوں اور اس مافیاؤں کے بارے میں بتاتا ہے کی فلم انڈسٹری میں نیپوٹزم کا بہت ہی زیادہ بول بالا ہے جس کی سرکوبی کیلئے سماج اور فلم جگت کے لوگوں کو اس سے جم کر لڑنے کی ضرورت ہے تاکہ فلم انڈسٹری میں نیپوٹزم کا شکار ہونے والے لوگ بچ سکیں اور سماج میں وہ ایسی فلمیں لائیں جس سے سماج میں پھیلی ہوئی گندگی اور ظلم و جبر کا خاتمہ ہوسکے۔

Post a Comment

0 Comments