Most Top Urdu Ghazal of Parvin Shakir and Habib Jalib


Most Top Urdu Ghazal of Parvin Shakir and Habib Jalib 

Here are very most and heart touching and very most top Urdu Ghazal of Parvin Shakir & Habib Jalib which is being read more and more in Urdu world because Most to Urdu Ghazal are very nice and very soft touching which leads impression to every heart of people specially lovers.

urdu ghazal, love ghazal, sad ghazal, urdu adab, aalmi urdu conference
Most Top Urdu Ghazal of Parvin Shakir & Habib Jalib


عکسِ خوشبو ہوں بکھرنے سے نہ روکے کوئی
اور بکھر جاؤں تو مجھ کو نہ سمیٹے کوئی

کانپ اٹھتی ہوں  میں یہ سوچ کے تنہائی میں
میرے چہرے پر تیرا نام نہ پڑھ لے کوئی

جس طرح خواب مرے ہوگئے ریزہ ریزہ
اس طرح نہ کبھی ٹوٹ کے بکھرے کوئی

میں تو اس دن سے ہراساں ہوں کہ جب حکم ملے
خشک پھولوں کو کتابوں میں نہ رکھے کوئی

اب تو اس راہ سے وہ شخص گزرتا بھی نہیں
اب کس امید پہ دروازے سے جھانکے کوئی

کوئی آہٹ کوئی آواز کوئی چاپ نہیں
دل کی گلیاں بڑی سنسان ہیں آئے کوئی
پروین شاکر
...................................
Akse Khushbu hu bikhrane se na roke koi
Aur bikhar jau to mujhko na samete koi

Kaanp Uthti hu main yeh sooch ke tanhayi mein
Mere chehre par tera naam na padh le koi

Jis Tarah khab mere ho gaye reza reza 
Us tarah na kabhi toot ke bikhre koi 

Main to us din se harasa hu ki jab hukm mile
Khushk pholo ko kitabo me na rakhe koi 

Ab to is rah se wo shakhsh guzarta bhi nahi 
Ab kis ummid pe darwaze se jhanke koi 

Koi aahat koi awaaz koi chaap nahi 
Dil ki galian badi sunsan hain aaye koi 
......

اس درد کی دنیا سے گزر کیوں نہیں جاتے
یہ لوگ بھی کیا لوگ ہیں مر کیوں نہیں جاتے

ہے کون زمانے میں میرا پوچھنے والا
نادان ہیں وہ جو کہتے ہیں کہ گھر کیوں نہیں جاتے

شعلے ہیں تو کیوں ان کو بھڑکتے نہیں دیکھا
ہیں خاک تو راہوں میں نکھر کیوں نہیں جاتے

آنسو بھی ہیں آنکھوں میں دعائیں بھی ہیں لب پہ
بگڑے ہوئے حالات سنبھل کیوں نہیں جاتے

حبیب جالب

Is  Dard ki duniya se guzar ku nahi jaate
Yeh log bhi kya log hai mar ku nahi jaate

hai kaun zamane mera pochne wala
Nadan hain wo jo kahte hain ki ghar ku nahi jaate

Shole hai to ku unko bhadkte nahi dekha
Hain khak to raho mein nikhar ku nahi jaate

Aansu bhi hain aankho mein duaaye bhi hain lab par

......


Post a Comment

0 Comments